سعودی جیلوں میں 1500 پاکستانی قید !!!! مگر کیوں ؟ وجہ انتہائی تشویشناک….

سعودی عرب میں اقامتی قانون کی خلاف ورزی ،1500پاکستانی سعودی جیلوں میں قید… سعودی عرب میں پاکستانی سفیر ہشام بن صدیق نے شمیسی سینٹرکا دورہ کیا اور موجود پاکستانی قیدیوں سے حالات دریافت کئے۔اس موقع پر قونصل جنرل شہریار اکبر خان اور قونصل محمد حسن بھی انکے ہمراہ تھے۔عرب ٹی وی کے مطابق شمیسی



ڈیپوٹیشن سینٹرکے ڈائریکٹر جنرل نے انکا استقبال کیااور سینٹر میں موجود پاکستانی قیدیوں اور وہاں فراہم کی جانے والی خدمات کے بارے میں سفیر پاکستان اور قونصل جنرل کو بریفنگ دی گئی،

انکو بتایا گیا کہ حراست میں لئے گئے افراد کو جلد از جلد اپنے ممالک بھجوانے کے عمل کو تیز کرنے کے لئے سعودی حکومت نے مختلف اقدامات کئے ہیں۔سفیر پاکستان نے زیر حراست افراد کیلئے ہائوسنگ، طبی اور خوراک کے اچھے انتظامات کی تعریف کی اور سعودی حکومت شکریہ ادا کیا۔سینٹر کی انتظامیہ نے بتایا کہ اس وقت تقریبا ً1500 افراد زیرحراست ہیں


جن پر مملکت کے اقامتی قانون کی خلاف ورزی ریکارڈ کی گئی ۔ خان ہشام بن صدیق نے اپنے وفد کے ہمراہ شمیسی سینٹر میں مختلف بیرکس کا دورہ کیا اور پاکستانی قیدیوں سے بات چیت کی۔ پاکستانی قیدیوں نے سفیر کو اپنے مسائل سے آگا ہ کیا۔ سفیر پاکستان نے قیدیوں کو سفارتخانے اور قونصلیٹ کی جانب سے ہر ممکن ا مداد کی یقین دہانی کرائی۔ بشکریہ اردو پائنٹ

This post has been Liked 0 time(s) & Disliked 0 time(s)

Leave a Comment